امدادی کاروائیاں


شروع الله کے نام سے جو بڑا مہربان اور نہایت رحم کرنے والا ہے. اللہ کے کرم سے ہماری ویلفئیر سوسائیٹی کی جانب سے متاثرین سیلاب زدگان کے لئیے کیمپ لگا دیا گیا ہے، اپنے تمام دوستوں اور عزیز اقارب سے رابطے کرلیے ہیں امداد کے لیے ابتدائی مراحل میں بہت اچھا رسپانس ملا ہے.                                   ہم ہر سال رمضان کی ستائیس تاریخ کو تقریباً پانچ سو مستحق لوگوں میں عید گفٹ کے نام سے امداد تقسیم کرتے ھیں یہ وہ مجبور اور لاچار لوگ ھوتے ھیں جنکا سوائے اللہ کے کوئی پرسان حال نہیں ھوتا یتیم بیوہ مسکین لوگ ھوتے ھیں جو عید پر نئے کپڑے نہیں بنا سکتے اور عید کی دوسری خوشیوں میں شریک نہیں ھو پاتے ایسے لوگوں کو عید کی خوشیوں میں شامل کرنے کے لئیے ہم اپنے طور پر انکے لئیے اپنی حیثیت کے مطابق کچھ کرنے کی کوشش کرتے ھیں،    مگر اس سال ہم نے اپنا یہ پروگرام ملتوی کردیا ھے کیونکے ہم ایسا سمجھتے ھیں کے سیلاب زدگان اس وقت زیادہ مستحق ھیں امداد کے۔                                             اگلے ہفتے کے شروع میں ہی پہلی ٹیم متاثرہ علاقوں میں امداد لے کے پہنچے گی انشااللہ جس میں کھانے کا سامان منرل واٹر اور دوائیاں شامل ہونگی، اس بار دو مرحلوں میں جائیں گی ہماری ٹیمیں پہلے مرحلے میں جو سامان بتایا گیا ہے وہ ہوگا اور دوسرے مرحلے میں جب انشاللہ سیلاب گزر چکا ہوگا اور لوگوں کو اپنے اپنے گھر بار کی طرف لوٹنا ہوگا اور اپنے گھر دوبارہ تعمیر کرنے کے لئے اور زندگی دوبارہ شروع کرنے کے لیے جن چیزوں کی ضرورت ہوگی وہ انہیں مہیا کرنے کی اپنی سی کوشش کریں گے ہم. ممکن ہے میری شمولیت پہلی ٹیم میں نا ہو سکے کیوں کے دوسرے مرحلے کے لیے یہاں رہ کر بہت کام کرنا ہے اگر میری شمولیت پہلی ٹیم کے ساتھ نا ہوسکی تو میں آپ سب کو مزید کارکردگی سے آگاہ کرتا رہوں گا، اور اگر میری شمولیت پہلی ٹیم میں ہی ہوگئی تو پھر واپس آکر انشااللہ وہاں کے حالات آپ سب سے شئیر کروں گا.                                                                                                             الله کے کرم سے ابھی تک ایک ہزار منرل واٹر کی بوتلیں کھجوریں اورآٹا بہت اچھی مقدار میں دیا ہے لوگوں نے ہمارے ایک دوست نے ملک پیک کے پانچ ہزار پیکٹ دینے کا وعدہ کیا ہے جو کے انشاللہ پیر یا منگل تک مل جائیں گے ہمیں. پہلے مرحلے میں ہم کیش نہیں دیں گے کیوں کے اس وقت کیش رقم ان لوگوں کے لیے بے معنی ہے، اس وقت تو لوگوں کے پاس کھانے کو کھانہ اور پینے کو صاف پانی ہی مییسّر نہیں ہے کیش انشاللہ دوسرے مرحلے میں دیا جائے گا جب لوگوں کو اپنے گھر از سر نو بسانے کا مرحلہ شروع ہوگا.             ابھی تک تو اتنا ہی کچھ ہو پایا ہے ہمارے تمام والینٹرز پورے جذبے اور خلوص کے ساتھ اپنے بھائیوں کی مدد کے جذبے سے سرشار لگے ھوئے ہیں اپنے اپنے کاموں میں ، آپ تمام حضرات سے دعا کی درخواست ہے. ایک بات اور آپ سب سے بتاتا چلوں کے یہاں یہ سب لکھنے کا مقصد نمائش نہیں ترغیب ہے، مجھے یقین ہے آپ سب لوگ بھی کسی نہ کسی حوالے سے اپنے بھائیوں کی امداد کے لیے سرگرم ہونگے اور اپنی بساط کے مطابق یقیناً کچھ نہ کچھ کر ہی رہے ہونگے. یہاں لکھنے کا مقصد صرف اور صرف جذبوں کو جگانا ہے اس پوسٹ کو پڑھنے کے بعد اگر کسی ایک شخص نے بھی اپنے طور اپنے بھائیوں کے لیے کچھ کرنے کی ٹھان لی تو اسکا اجر ہم کو بھی ملے گا انشااللہ. ابھی تک اتنا ہی ھے بتانے کے لئیے باقی صورت حال اگلی پوسٹ میں تحریر کروں گا انشااللہ.

Advertisements
This entry was posted in ہمارا معاشرہ. Bookmark the permalink.

10 Responses to امدادی کاروائیاں

  1. فرحان دانش نے کہا:

    میری طرف سے تمام اہل وطن کو جشن آزادی کی بھرپور مبارکباد

    شعر عرض کیا ہے
    خدا کرے کہ مری ارضِ پاک پر نہ اُترے
    وہ فصلِ حکمران جس سےملک کو اندیشۂ زوال نہ ہو

  2. جاویداقبال نے کہا:

    السلام علیکم ورحمۃ وبرکاتہ،
    جزاک اللہ خیر۔ اللہ تعالی آپ کواورہمت وحوصلہ دے۔ اوردوسرےلوگوں کوبھی اس کام کی رغبت دے۔ آمین ثم آمین

    والسلام
    جاویداقبال

  3. fikrepakistan نے کہا:

    وعلیکم السلام۔ اللہ پاک آپکی دعا قبول و مقبول فرمائیں۔آمین۔

  4. ABDULLAH نے کہا:

    اللہ پاک آپکی اور ان سب کی ہمتوں میں اضافہ فرمائے جو اس دکھ کی گھڑی میں اپنے بھائیوں کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں،اور آپ کے کیئے ہوئےنیک کاموں کو قبول و منظور فرمائے آمین
    ہم بھی اپنی باساط بھر کوششوں میں لگے ہیں متحدہ اب تک دو کرورکا سامنا ضروقرت مندوں کو پہنچا چکی ہے اور مزید دو کرور کا سامن عنقریب بھیجا جانے والاہے!
    سابق صدر پرویز مشرف نے بھی اپنے فنڈ کا اعلان کیا ہے اس میں بھی لوگ جوق در جوق رقوم جمع کروارہے ہیں،اللہ تمام لوگون کو مشکلوں اور پریشانیوں سے نجات عطا فرمائے آمین
    اب بھی کچھ لوگ ایسے ہیں جن کا اس ملک پر ملکیت کا دعوی تو ہے مگر اس ملک کے لیئے کچھ کرنے کا جذبہ زیرو ہےلقگقں کو لڑوانے میں جو سب سے اگے آگے ہوتے ہیں مگرمدد کرنے میں دوردور نظر نہیں آتے بلکہ جو لوگ کچھ کرنا چاہ رہے ہوں ان کے جذبوب کو بھی سلانے کی کوشش کرتے ہیں، اللہ ایسے لوگوں کو بھی ہدایت کی توفیق عطافرمائے،آمین

    • fikrepakistan نے کہا:

      السلام وعلیکم، عبداللہ بھائی میرے نزدیک ھر وہ انسان ھر وہ تنظیم عظیم ھے جو مشکل کی اس گھڑی میں اپنے مسلمان بھائیوں کے دکھ میں برابر کی شریک ھے، اور اپنے اپنے طور انکی مدد کرنے کے لئیے دن رات ایک کیے ھوئے ھے۔ میری دعا ھے اللہ ھر پاکستانی اور ھر مسلمان کو یہ جذبہ عطا کریں آمین، اور مشکل کی اس گھڑی میں تفرقے میں پڑنے کے بجائے صرف انسان اور مسلمان بن کر سوچیں۔ ہمارے منہ سے جو بات بھی نکلے وہ امت کو جوڑنے کے لئیے نکلے ہماری تحریر صرف قوم کو جوڑنے کے لئیے ھو توڑنے کے لئیے نہیں۔ پاکستان ھے تو ھم ہیں پاکستان نہیں تو کوئی بھی نہیں بچے گا، کاش یہ معمولی سی بات ھم سب کی سمجہ میں آجائے۔

  5. اے کے ملک نے کہا:

    ن تمام لوگوں کو سلام جو خاموشی سے امدادی کاروائیوں میں مصروف ہیں اور زندگیاں بچا رہے ہیں۔ اللہ ان کو اور ان کے گھر والوں کو شادو آباد رکھے۔ سیلاب سے دو کروڑ افراد متاثر ہوئے ہیں،تیرہ سو چوراسی ہلاک اور سات لاکھ گھر تباہ ہوئے ہیں۔۔ یہ وقت باتوں کا نہیں، کام کا ہے۔

    • fikrepakistan نے کہا:

      اے کے ملک صاحب سلام ھے آپکی سوچ کو۔ کاش اللہ ھم سب کو ایسی خوبصورت سوچ عطا کردیں اور ہم بجائے تفرقےمیں پڑنے کے صرف اور صرف اپنے مسلمان بھائیوں کی مدد کرنے کا سوچیں، جو ذہنی طاقت ہم آپس میں لڑنے جھگڑنے میں ضائع کر رہے ھیں اس ذہنی طاقت کو اپنے بھائیوں کی مدد کے لئیے استعمال کریں۔ کاش ہم دین اسلام کا مغز سمجھ سکیں تو ہماری سمجھ میں آجائے کے یہ وقت یہ اپنے مظلوم بھائیوں کی مدد ہی دین اسلام کا مغز ھے۔ کاش ہم اس وقت کو صحیح طور استعمال کرتے ھوئے اپنی مغفرت کروانے میں کامیاب ھوجائیں اللہ سے۔ کاش یہ بات ھم سب کی سمجھ میں آجائے کاش۔

  6. محب علوی نے کہا:

    بہت عمدہ فکر پاکستان،

    اللہ آپ کو اور آپ کی تنظیم کو مزید ہمت عطا کرے اور لوگوں کو مزید امداد کی ہمت اور توفیق دے۔

    ایسی پوسٹس اس لیے بھی ضروری ہیں کیونکہ اس وقت بے حسی کے ساتھ ساتھ مایوسی بھی طاری ہے جو کہ صد شکر اب کم ہونا شروع ہو رہی ہے ۔ ضروری ہے کہ لوگوں کو بتایا جائے کہ لوگ مدد کر بھی رہے یہں اور متاثرین تک امداد پہنچا بھی رہے ہیں اس سے دوسروں کے بھی ھوصلے بلند ہوں گے اور مزید لوگوں میں مدد کا جذبہ ابھرے گا

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s