سازش


امریکہ کے فل برائٹ پروگرام سے متعلق بلاگ پر ایک صاحب نے ایک تحریر لکھی ہے http://darveshkhurasani.wordpress.com/2011/09/17/1074/ جسے پڑھنے کے بعد میرا یقین اور زیادہ پختہ ہوگیا ہے کے ہم آج جس بدتر حال میں ہیں بلکل ٹھیک ہیں، دنیا میں کچھہ بھی بےسبب نہیں ہوتا کوئی اگر آسمانوں کی بلندی پر سفر کر رہا ہے تو وہ اس مقام پر بے وجہ نہیں ہے اور کوئی اگر پاتال میں مزید دھنستا جارہا ہے تو اسکی بھی کوئی وجہ ہے، دنیا میں کچھہ بھی بےسبب نہیں ہوتا۔

محترم نے لکھا ہے کے اس پروگرام کے تحت وہ لوگ میڑک اور ایف اے کے طالب علموں کو پرموٹ کرتے ہیں، اور اسکی وجہ محترم نے اپنی ذہنیت کے مطابق یہ لکھی ہے کہ یہ بہت کچی عمر ہوتی ہے اس عمر میں اچھے برے کی تمیز نہیں ہوتی اور بہکنے کے چانسس بہت زیادہ ہوتے ہیں۔ پہلی بات تو یہ ہے کے ایسا کچھہ بھی نہیں ہے میڑک اور انٹر کا تو ذکر تک نہیں ہے اس سائٹ پر، اسکالر شپ حاصل کرنے کی جو شرائط اس سائٹ پر درج ہیں ان شرائظ پر تو پاکستان کے اچھے اچھے پھنے خاں پورے نہیں اترتے میڑک اور انٹر کے طالب علموں کی تو بات ہی بہت دور کی ہے، سچ اور جھوٹ کی بلکے جھوٹ کا صیغہ یہاں درست نہیں لگ رہا (جھوٹ کو بغض پڑھا جائے) کی پہچان کے لئیے میں یہاں وہ فل برائٹ پروگرام کا لینک بھی پوسٹ کر رہا ہوں تاکے قارئیں خود فیصلہ کر سکیں

http://www.usefpakistan.org/FulbrightScholar.html

یہ لنک پڑھنے کے بعد زرا غور کیجئیے کے جو شخص پہلے سے اسکالر ہوگا، یا کسی سبجیکٹ میں پی ایچ ڈی ہوگا کیا اسکی ذہنی سطح ایسی ہی ہوگی جیسی کے موصوف نے اپنی پوسٹ میں بیان کی ہے؟ اب ظاہر ہے اتنی تعلیم حاصل کرنے والا پندرہ سولہہ سال کا تو ہو نہیں سکتا، اتنی تعلیم حاصل کرنے والا انسان ٹھیک ٹھاک پختہ عمر تک پہنچ جاتا ہے اور اگر اتنی تعلیم حاصل کرنے کے بعد اور اتنے سال اپنے ملک اپنی قوم اپنے مذہب کے ساتھہ گزارنے کے بعد بھی اگر کوئی اغیار کی محض ایک یا دو سال کی رفاقت سے بھٹک جاتا ہے تو ایسے شخص کے لئیے تو یقین کر لینا چاہئیے کو وہ کبھی بھی اپنے وطن اپنی قوم اپنے مذہب کا تھا ہی نہیں نہ وہ اپنے وطن سے مخلص تھا نہ وہ اپنی قوم سے مخلص تھا اور نہ ہی وہ اپنے مذہب سے مخلص تھا، پھر تو یہ الٹا ہمارے نظام اور ہماری دینی تعلیم کے اوپر سوالیہ نشان ہے کے کیا یہ سب اتنا ہی کمزور تھا کے انکی دو سال کی محنت ہماری سالوں کی ریاضت پر بھاری پڑ گئی؟۔

دنیا جانتی ہے کے چائینہ امریکہ کا بدترین دشمن ہے مگر حیرت کی بات دیکھئیے کے بل گیٹس نے اپنی زندگی کی سب سے بڑی انوسٹمنٹ چائینہ میں تمباکو نوشی کے خلاف اشتہاری مہیم پہ کی ہے وہ چاہتا ہے کے چائینیز تمباکو نوشی ترک کر دیں کیوں کے یہ انسانی صحت کے لئیے بہت مضر ہے، اب ڈھونڈ کر لائیئے اس میں بھی سازش کا پہلو، پاکستان کے بیشتر ایسے ادارے ہیں جو غیر ملکی یا یوں کہہ لیں ان ہی غیر مسلموں کے تعاون سے چل رہے ہیں جس سے پاکستان کے غریب اور نادار لوگ مستفید ہورہے ہیں، میں نے پہلے بھی اپنی پوسٹ میں ذکر کیا تھا جناح ہوسپٹل میں پی اے ایف ایک ادارہ ہے جو کے غریبوں کے لئیے دوائیاں اور تمام قسم کے ٹیسٹ مفت مہیا کرتا ہے یہ ادارہ مکمل طور پر غیر ملکی امداد سے چل رہا ہے، پاکستان کا ہائر ایجوکیشن یعنی ایچ ای سی یہ بھی غیر ملکی امداد سے ہی چل رہا ہے ایسے سینکڑوں ادارے ہیں جو غیر ملکی امداد سے چل رہے ہیں اب ڈھونڈ لائیے ان میں بھی سازش کا پہلو۔ ہمارا المیہ یہ ہے کہ ہم انکے اچھے کاموں میں بھی سازش تلاش کرنے کی کوشش کرتے ہیں، خود تو کچھہ دے نہیں پاتے اپنی قوم کو اگر کوئی انسانیت کے نام پر دے بھی رہا ہو تو اس میں بھی اسکا اپنا ہی مفاد ڈھونڈنے کی کوشش کرتے ہیں.

قصور ایسے لوگوں کا بھی نہیں ہے مسلہ یہ ہے کے ایسے لوگ جن لوگوں کی پیروی میں عشرے گزار چکے ہیں ان لوگوں نے انکے دماغوں میں اتنے عرصے تک یہ کچھہ غلاضت بھری ہے کیوں کے یہ سیاسی اور نام نہاد مذہبی رہنما خود تو کچھہ دے نہیں پائے آج تک اپنی قوم کو اور نہ ہی کبھی دے سکتے ہیں تو یہ نہیں چاہتے کے یہ کم علم عوام انکے چنگل سے نکلے اور آزاد ہو کر سوچے کے یہ آخر ہمارے ساتھہ ہو کیا رہا ہے اتنے سالوں سے دنیا تو بغیر کسی لالچ کے ہمارے لئیے محض انسانیت کے نام پر اتنا کچھہ کر رہی ہے اتنا کچھہ دے رہی ہے اور جنکے پیچھے ہم عشروں سے چل رہے ہیں انہوں نے ہمیں سوائے نفرت کے لسانیت کے فرقہ بندی کے مسلک پرستی کے کچھہ دیا ہی نہیں ہے، یہ وجہ ہے کے ایسے نام نہاد رہنما اس طرح کی ذہنی پرورش کرتے ہیں لوگوں کی تاکے لوگ اغیار کے اچھے کاموں میں بھی سازش کا پہلو ہی ڈھونڈیں اور انکی دکانیں چلتی رہیں۔

ایسے لوگوں کو میرا مشورہ ہے کے اللہ کے واسطے بغیر تصدیق کئے اسطرح کی غیر مصدقہ باتیں نہ پھیلائیں اگر کچھہ اچھا نہیں کرسکتے تو کم از کم برا بھی نہ کریں اگر کوئی اچھا کام کر رہا ہے تو اسکی تعریف کریں چاہے وہ اپنا ہو یا بیگانا ہو باقی فیصلہ میں پڑھنے والوں پر چھوڑتا ہوں قارئین سے گزارش ہے کے فل برائٹ والا لنک ضرور پڑھیں اسے پڑھے بغیر اصل حقیقت تک نہیں پہنچ پائیں گے آپ۔

Advertisements
This entry was posted in ہمارا المیہ. Bookmark the permalink.

17 Responses to سازش

  1. M نے کہا:

    اگرچہ میں خراسانی صاحب کے خیالات سے اتفاق نہیں کرتا، تاہم آپکی اطلاع کے لیے عرض ہے کہ فلبرائٹ ایک جامع پروگرام ہے جس میں ہر سطح کی طلبا و طالبات کے لیے امریکہ میں طویل اور قلیل مدت کے تعلیمی مواقع فراہم کیے جاتے ہیں۔ اس میں انٹرمیڈیٹ اور میٹرک سطح بھی شامل ہے۔

    • fikrepakistan نے کہا:

      ایم صاحب، ممکن ہے آپکی بات درست ہو، مگر دو ہزار بارہ کے لئیے جو شرائط دی گئی ہیں جسکا لنک بھی میں نے پوسٹ کیا ہے اس میں تو ایسی کوئی سہولت نظر نہیں آتی۔ اور اگر مان بھی لیا جائے کہ ایسا ہے بھی تو اس سے یہ کہاں ثابت ہوتا ہے کہ وہاں جانے والی تمام لڑکیاں اپنی عصمتیں لٹوا کر آتی ہیں؟ کیا تمام کی تمام لڑکیاں ہی اپنی عصمت دری پر خاموشی اختیار رکھیں گی کوئی ایک بھی ایسی نہیں ہوگی جو دنیا کو بتائے کے اس پروگرام کے تحت کوئی نہ جائے وہ لوگ محض ہماری عصمتیں لوٹنے کے لئیے اتنا پیسہ ہم پر خرچ کر رہے ہیں۔

      • M نے کہا:

        جی عصمتوں کے بارے میں درست فرمایا آپ نے۔

        اور ممکن ہے 2012 کے لیے اس سطح پر داخلے نہ کیے گئے ہوں۔ مگر گزشتہ سال اور اس سے پہلے کئی سال ایسا ہوا تھا۔ میں ذاتی طور پر کچھ طلبا و طالبات کو جانتا ہوں جو اس مین گئے تھے۔

      • fikrepakistan نے کہا:

        ایم صاحب، یہ تو بہت اچھی بات ہے کہ آپ ایسے کچھہ لوگوں کو ذاتی طور پر جانتے ہیں جو اس پروگرام کے تحت علم حاصل کر چکے ہیں، حدیث ہے کے علم حاصل کرنا ہر مرد عورت پر فرض ہے۔ اور ایک اور حدیث ہے کے علم حاصل کرو چاہے چین ہی کیوں نہ جانا پڑے۔ ایم بھائی آپ کچھہ ایسے لوگوں کے بارے میں بھی ضرور لکھئیے گا کے آپ نے ایسے طلبہ و طالبات میں کیا تبدیلی محسوس کی وہاں سے آنے کے بعد، کتنی لڑکیاں اپنی عصمتیں لٹوا کر آئیں اور کتنے لڑکے مرتد ہو کر آئے میری گزارش ہے آپ سے کے لازمی لکھئیے گا تاکے ہم سب تک اصل حقائق پہنچ سکیں۔

  2. عثمان نے کہا:

    بھائی جی ،
    آپ کا مسئلہ یہ ہے کہ آپ اپنی ویلفئیر سوسائٹی کے توسط سے کی جانے والی خدمت خلق چھوڑ کر یہ اچانک بھانڈوں ، میراثیوں ، مسخروں اور مذہبی للوں کی ڈنگ ٹپاؤ کو اس قدر سنجیدہ لینا شروع کردیتے ہیں۔ کگے میتری کی کسی کھو سے لکھے جانے والے مذکورہ بلاگ پر کچھ عرصہ قبل جناب عبدالستار ایدھی کو جاہل اور شیطان کا ایجنٹ قرار دیا جارہا تھا۔ ایسے میں آپ اور کیا توقع رکھتے ہیں ؟ اللہ کی شان ہے کہ آجکل سکولوں کے چھٹے ریسرچ سکالرشب پر "رائے” رکھتے پھرتے ہیں۔ جن جگتوں پر محض ہتھ سٹ کر آگے نکل جانا چاہیے آپ اس کا رد لکھنے بیٹھ گئے۔
    گولی کرائیں ، اور فی الوقت سیلاب کا احوال سنائیں۔

    • fikrepakistan نے کہا:

      عثمان بھائی تبصرے کا شکریہ، عبدالستار ایدھی کے بارے میں چاہے کوئی کچھہ بھی کہہ لے دنیا جانتی ہے کے وہ کیا ہیں، ایسے ہی لوگ اپنا نام تک ظاہر کئیے بغیر انہیں کروڑوں روپے نہیں دے جاتے۔ ہر اس انسان کو شرم آنی چاہئیے جو ایسے انسان دوست شخص پر اس طرح کے بیہودہ الزامات لگاتا ہے، اصل محسن پاکستان کوئی اور ہو ہی نہیں سکتا یہ اعزاز عبدلستار ایدھی صاحب کو ملنا چاہئے لیکن افسوس کے ہم محسن کش قوم ہیں، سیلاب کی خبریں تو آپکو میڈیا کے زریعہ مل ہی رہی ہونگی، اور لسانیت کی جو آگ زلفقار مرزا نے لگائی ہے اسکے اثرات یہ آئے کے اب کراچی سے کوئی امداد دینے کے لئیے تیار نہیں ہے۔

  3. imran نے کہا:

    sir really excelent
    Allah give u more and möre happy

    • fikrepakistan نے کہا:

      عمران صاحب، بلاگ پر خوش آمدید۔ تحریر کی پسندیدگی کے لئیے بہت شکریہ اور آپکی دعاوں کے لئیے بھی بہت بہت شکریہ، یہ ہی جذبات میرے بھی آپ کے لیے ہیں۔

  4. Zero G نے کہا:

    قصور ایسے لوگوں کا بھی نہیں ہے مسلہ یہ ہے کے ایسے لوگ جن لوگوں کی پیروی میں عشرے گزار چکے ہیں ان لوگوں نے انکے دماغوں میں اتنے عرصے تک یہ کچھہ غلاضت بھری ہے

    میرے بھا ئی پیلی بات یہ کی جب آپ مسئلے کو محسوس کر رہے ہیں تو ہاتہ زرا ہلکا رکھ لیتے
    دوسری بات یہ کہ اشتھار میں مینارٹیز کو انکریج کیا گیا ہے

    ویسے اوور آل میں آپ سے متفق ہوں۔

    • fikrepakistan نے کہا:

      زیرو جی صاحب بلاگ پر خوش آمدید، آپ نے درست فرمایا کے اشتھار میں منارٹیز کو انکریج کیا گیا ہے تو یہ تو ایک اور دلیل ہے میری بات کی، اب آپ ہی بتائیں کے منارٹیز کو وہاں بلا کر وہ کونسا ایمان خراب کریں گے انکا؟ یا انہیں کیسے مرتد بنائیں گےِِ؟ ۔ اور آپ یقین مانیں بہت ہی ہلکا ہاتھہ رکھا ہے، اتنا کچھہ تھا کہنے کے لئیے لیکن لحاط کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے ہیں اتنے پر ہی اکتفا کیا ہے۔ تحریر سے متفق ہونے کا بہت بہت شکریہ۔

  5. سفیر نے کہا:

    ارے بھئی اگر غیر ملکی امداد پر جائیں تو ہماری فوج بھی غیر ملکی امداد ہی پر تو چل رہی ہے۔ ہر سال لگ بھگ ڈیڑھ ارب ڈالر امریکہ سے ملتے ہیں ہماری فوج کو ۔۔۔ اور پچھلے دس برس سے مل رہے ہیں۔ اس کے بارے میں کیا کہئے گا

    • fikrepakistan نے کہا:

      سفیر بھائی بہت لمبی فہرست ہے اس غیر ملکی امداد کی تو، یہ پوری قوم یہ غیر ملکی امداد پر پل رہی ہے پاکستان کے پاس جو اس وقت زر مبادلہ کے ذخائر ہیں وہ اٹھارہ ارب ڈالر ہیں جو کے سارے کے سارے قرضے کے ہیں، اس کے علاوہ ساٹھہ ارب ڈالر سے بھی زیادہ کا مزید قرضہ ہے۔ جذبات بیچنا الگ بات ہے اور حقائق الگ چیز ہوتے ہیں، پچھلے چونسٹھہ سالوں سے صرف جذبات بیچ بیچ کر ہی پالا گیا ہے اس قوم کو اور یہ قوم بھی پوری خوشی کے ساتھہ جذبات کی خریدار بن جاتی ہے۔ جب تک جذبات کے خریدار موجود ہیں تو ایسی سوچیں قائم رہیں گی اور لوگوں کو بہکاتی رہیں گی۔

  6. fikrepakistan نے کہا:

    ڈاکٹر جواد صاحب، آپکے دونوں تبصرے میرے پاس اسپام میں شو ہو رہے تھے اسلئے وہ شائع ہونے سے قاصر رہے، اگر آپ چاہیں تو دوبارہ تبصرہ کر سکتے ہیں مجھے شائع کرنے میں کوئی قباحت نہیں ہے۔

  7. عدنان مسعود نے کہا:

    غالب گمان ہے کہ خراسانی صاحب کی مراد اسٹوڈنٹ ایکسچینج پروگرام ہوگی، فل برائٹ نہیں کیونکہ اس کے لئے شرائط کچھ سخت ہیں۔ نیز بنا محرم ایک سال کے لئے کسی خاتون کا ایک غیر مسلم گھرانے میں‌ قیام کا تو غالبا کسی بھی مکتبہ فکر میں‌جواز نہیں مل پائے گا۔ وہ لوگ جو بنا محرم سفر کے قائل ہیں وہ بھی اگر اس موضوع میں‌شارع کے حقیقی مفہوم پر غور کریں تو اس قیام کی شرعی حیثیت متعین کرنا کچھ مشکل نا ہوگا۔ لیکن یہ حرمت صرف خواتین یا غیر مسلم گھرانے پر لاگو نہیں‌ہوگی،کہ ایک ہی گھر میں غیر محرم، غیر ساتر خواتین کے ساتھ اختلاط کی صورت مسلم مردوں پر بھی اسی طرح لاگو ہوگی۔

    بسا اوقات حق بات کے تسلیم کرنے میں انٹولیکچول ڈسکریمینیشن یا تبعیض فکری آڑے آجاتی ہے، ہو سکتا ہے کہ میں مصنف کے استدلال یا طرز تحریر سے متفق نا ہوں لیکن جو پیغام دینے کی کوشش کی گئی تھی اس سے اتفاق نا کرنا کتمان حق ہوگا۔

    • fikrepakistan نے کہا:

      عدنان بھائی درویش بھائی نے فلبرائٹ سے مطعلق ہی لکھا تھا، اور یہ میں نے جو فلبرائٹ کا لنک پوسٹ کیا ہے اس میں ایسا کہیں نہیں لکھا ہوا کے اسٹوڈنٹ کو کسی فیملی کے ساتھہ رہنا ہوگا وہ کوئی زبردستی کر کے نہیں لے جا رہے اپنی غرض پہ ہی جارہے ہیں لوگ۔۔ اور میرا مقصد یہ سب بھی نہیں تھا میرا مقصد اس سوچ کی نفی تھی جو ہر اچھے کام میں بھی سازش کا پہلو ڈھونڈنے کی کوشش کرتی ہے،

  8. ادب و آداب نے کہا:

    یہ لوگ اچھائی دکھاتے ہیں اور واقعی کرتے بھی ہیں
    مگر اس وقت بات ہو رہی ہے کلچر کی
    اسلامی روایات کی

    غیر مسلم ممالک میں مسلمانوں کے ساتھ روا سلوک کی
    یہاں سے تعلیم یافتہ افراد باہر چلے جاتے ہیں واپس کیوں نہیں آتے
    برین واشنگ کی کئی ہے

    ہمارا ٹیلنٹ اپنے استعمال میں لایا جا رہا ہے

    اور ہم۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

    ان کے ہی گیت گائے جا رہے ہیں

    کیوں وہاں کے نو مسلم مسلمانوں میں اسلام کی مقبولیت بڑھ رہی ہے
    کیوں وہ پردے کی مخالفت کرتے ہیں وہ بھی بس عورتوں کے معاملے پر؟؟/

    کیون یہودی شدت پسند نہیں وہ مسلمان داڑھی والا ہے دہشت گرد کیوں؟

    • fikrepakistan نے کہا:

      ادب و آداب بھائی بلاگ پر خوش آمدید۔ پہلی بات تو یہ ہے کے ہمارے نوجوان وہاں جاتے ہی کیوں ہیں؟ وہ ہاتھہ پاوں نہیں جوڑتے بھائی۔ تھوڑا سا حقیقت پسند بنیں، وہاں لوگ اپنی غرض سے جاتے ہیں یہاں نہ انہیں تعلیم ملتی ہے نہ نہ روزگار ملتا ہے نہ جان و مال کی حفاظت ملتی ہے، جبکہ یہ سب انہیں وہاں ملتا ہے یا تو پہلے خود کو اتنا مظبوط کرلیں بجائے اس کے کہ ہمارے لوگ وہاں جائیں الٹا ساری دنیا سے لوگ ہمارے وطن میں آئیں۔ کبھی سنا ہے کے انگلینڈ سے کوئی پاکستان علاج کروانے آیا ہو آپریشن کروانے آیا ہو یا تعلیم حاصل کرنے آیا ہو؟ جذباتیت سے نکل کر ٹھنڈے دماغ سے سوچیں زرا بھائی۔ حقیقت یہ ہے کے ابھی اگر امریکہ کینڈا یا یورپین ممالک ویزہ فری کردیں پاکستان کے لئیے تو پاکستان میں صرف معزور، بوڑھے، اور بچے ہی بچیں گے باقی سب کے سب وہاں جانے کو ترجیح دیں گے۔ تو بھائی پہلے ہمیں اس قابل ہونا ہوگا پھر یہ سب باتیں کرتے ہوئے ہم اچھے لگیں گے۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s