خوارج طالبان کے سر کچلنے کا وقت آن پہنچا۔


غربت اور جہالت بڑے مسائل ہیں، مگر ان سے بھی بڑا مسئلہ وہ ذہنی کیفیت ہے جو ان مسائل کو مقدر کا نام دے کر مجبور بنے رہنے پر قائل کر دیتی ہے.

اگر آپ کے دانشور مساوات کی جگہ خیرات کو دینے لگیں تو خود سوچ لیں کہ وہ کس قسم کے معاشرہ کی وکالت کر رہے ہیں، جن معاشروں میں انسانوں کو آگے بڑھنے کے مواقعے نہ ملیں وہاں ان کا خیرات پر پلنا مقدر. اسی طرح جب افراد کو اس قابل ہی نا چھوڑا جائے کہ وہ اختلاف برداشت کر سکیں،

جب ان کو یہ سکھا دیا جائے کہ جو ان کی طرح نہیں سوچتا وہ ان کا دشمن ہے، غیر ہے اور ایسے فرد کی بات ہرگز نا سنیں تو پھر معاشرے پر گھٹن تو طاری ہونا ہی ہے، تازہ ہوا انسانی صحت کے لئے بے حد ضروری ہے، اسی طرح تازہ خیالات انسانی معاشروں کو آگے بڑھانے کے لئے ضروری ہیں، ورنہ ہوس، درندگی، خود غرضی اور جہالت کے جراثیم پھل جاتے ہیں اور معاشرہ بیمار ہو جاتا ہے –

خوارج طالبان کا سر کچلنے کا وقت آن پہنچا ہے

Advertisements
This entry was posted in ہمارا معاشرہ. Bookmark the permalink.

2 Responses to خوارج طالبان کے سر کچلنے کا وقت آن پہنچا۔

  1. کراچی میں بیٹھ کر طالبان کو کچلنے کا مشورہ دے رہے ہیں آپ؟ آپکو چائیے کہ بھائی لوگوں سے ایک کلاشنکوف ادھار لیں ، قبائلی علاقہ کا رخ کریں وہاں جا کر زور دار دھاڑ ماریں ” اوےےےےے خواریج ااااااا آج تمہاری موت چل کر تمہارے گھر پر آئی ہے”
    باقی اللہ آپ پر انتہائی کرم کرے گا۔۔۔۔۔ جنت کی خہوایش تو ضرور کرتے ہونگے آپ؟

    • fikrepakistan نے کہا:

      جواد بھائی سچ بات تو یہ ہے کہ میں نے آج تک جنت کی خواہش نہیں کی، اگر زندگی میں کبھی کوئی نیک کام کیا ہے تو صرف اللہ کی رضا اللہ کی محبت رسول کی محبت میں کیا ہے۔ باقی رہی میرے وزیرستان جانے کی بات تو پہلا فرض یہ ان افواج کا ہے جنہیں میرے دئیے ہوئے ٹیکس سے تنخواہ دی جاتی ہے، ہاں اگر وہ کم پڑ گئے اور ریاست نے عام عوام سے مدد مانگی تو وعدہ ہے آپ سے کہ میں ضرور جاوں گا۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s