یہ ویڈیو دیکھنے کے بعد بھی کیا کوئی طالبان کا حامی ہوسکتا ہے؟


اس ویڈیو کے دیکھنے کے بعد کوئی سور کے نطفے سے پیدا ہی طالبان کی ہمایت کرسکتا ہے۔

https://www.facebook.com/photo.php?v=585071501585011

Advertisements
This entry was posted in ہمارا المیہ. Bookmark the permalink.

8 Responses to یہ ویڈیو دیکھنے کے بعد بھی کیا کوئی طالبان کا حامی ہوسکتا ہے؟

  1. بڑے بھائی! ایک تو مجھے یہ سمجھ نہیں آتا کہ آپ اس قدر جذباتی کیوں ہوجاتے ہیں۔
    حقیقت تو یہ ہے کہ لوگ طالبان کی نہیں بلکہ مذاکرات کی حمایت کرتے ہیں۔ ملک کی ایک عظیم اکثریت بشمول دینی طبقے کی ایک عظیم اکثریت بھی طالبانی شدت پسندی سے اختلاف رکھتی ہاں یہ ضرور ہے کہ طالبان کو اس نظر سے نہیں دیکھنا چاہتی جس نظر سے غامدیت کے پیروکار، قادیانی، شیعہ ، لبرل اور روشن خیال دیکھتے ہیں۔
    پھر ویڈیوز دیکھ کر فیصلے کرنا دانشمندی نہیں۔ فیصلے قومی اور ملکی مفادات لیکن ان سے بھی پہلے اسلامی نکتہ نگاہ سے کرنا ضروری ہیں۔ جو لوگ مذاکرات کے حامی ہیں انکا خیال یہ ہے کہ آپریشن سے یہ مسئلہ حل نہیں ہوگا بلکہ مزید خراب ہونے اور مزید تباہی اور بربادی کی طرف جائے گا۔ دنیا میں اس قسم کی شدت پسندی کبھی بھی آپریشن سے کنٹرول نہیں کی جاسکی ہے بالخصوص قبائلی علاقہ ایک مخصوص جنگجو قسم کی نفسیات اور تاریخ رکھتا ہے۔ جہاں اس قسم کے ملٹری آپریشنز کا کامیاب ہونے کے امکانات نہایت کم ہیں۔

    • fikrepakistan نے کہا:

      جواد بھائی، ایک تو یہ مغالطہ دور کرلیں کے پاکستان کے لوگوں کی اکثریت مذاکرات کی ہامی ہے، اب اکثریت کی رائے یہ ہی ہے کہ جلد سے جلد آپریشن کر کے ان خوارج کا خاتمہ کیا جائے ورنہ یہ ناسور جس تیزی سے اپنے پر پھیلا رہا ہے یہ سارے ملک کو اپنی لپیٹ میں لے لے گا۔ خود دیو بندی حضرات کی اکثریت انکے خلاف آپریشن کے حق میں ہے، دیوبندی حضرات میں بھی ایک مخصوص طبقہ ہے جو انکے حق میں مختلف قسم کی تاویلین گھڑتا ہے، ورنہ میرے خود کئی دوست احباب ایسے ہیں جنکا تعلق دیوبندی مکتبِ فکر سے ہے وہ لوگ سخت مخالف ہیں انکے، اور رہی بات یہ کہ طاقت سے نہیں کچلہ جا سکتا انہیں تو یہ فلسفہ بھی غلط ہے، حضرت علی کرم اللہ وجہہ نے طاقت سے ہی کچلہ تھا ان خوارج کو، تامل ٹائیگرز کو بھی طاقت سے ہی کچلہ ہے سری لنکا نے، انڈین پنجاب میں الحیدگی کی تحریک کو بھی طاقت سے ہی کچلہ ہے انڈیا نے، ایسی سینکڑوں مثالیں بھری پڑی ہیں۔ اسلئیے بہتر یہ ہی ہے کہ مزید کنفیوژن پھیلانے کے بجائے پوری قوم کو ذہنی طور پر تیار کیا جائے ان درندوں کے خلاف بر سرِ پیکار ہونے کے لئیے۔

  2. یہ سور کے نطفے والی بات بہت ہی نا شائستہ اور غیر مناسب ہے۔ انسان کو اپنی بات سو فیصد درست ہونے کا چاہے سو فیصد یقین ہو، اخلاق اور تہذیب کا اہتمام برقرار رکھتے ہوئے وہ بات دوسروں تک پہنچائی جا سکتی ہے۔ باقی یہ کہ اوپر دیا گیا لنک کسی ویڈیو تک نہیں لے جاتا۔

  3. میں بے حد ممنون ہوں آپ کا۔ اللہ آپ کو اجر دے اس خیر کے کام کا۔ اب جو اگر ہامی کو حلوے والی ح سے لکھ ڈالیں تو بس پھر کیا ہی بات ہے۔

  4. بہت شکریہ، مہربانی۔

جواب دیں

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

آپ اپنے WordPress.com اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Twitter picture

آپ اپنے Twitter اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Facebook photo

آپ اپنے Facebook اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Google+ photo

آپ اپنے Google+ اکاؤنٹ کے ذریعے تبصرہ کر رہے ہیں۔ لاگ آؤٹ / تبدیل کریں )

Connecting to %s